1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

آزاد فلسطینی ریاست صوابدید نہیں ذمہ داری ہے، ایردوآن

ترک وزیر اعظم ایردوآن نے آزاد فلسطینی ریاست کے قیام اور اس کی اقوام متحدہ میں رکنیت کی بھرپور حمایت کی ہے۔ قاہرہ میں عرب لیگ کے وزرائے خارجہ کے اجلاس میں انہوں نے اسرائیلی پالیسیوں کو بھی تنقید کا نشانہ بنایا۔

default

ترک وزیر اعظم ایردوآن

منگل کو ترک وزیر  اعظم رجب طیب ایردوآن نے مصری دارالحکومت میں عرب لیگ کے وزرائے خارجہ کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ اقوام متحدہ میں ایک آزاد فلسطینی ریاست کی رکنیت کی حمایت کرنا عرب ممالک کی ذمہ داری ہے، ’یہ ایک اختیاری فیصلہ نہیں بلکہ ایک ذمہ داری ہے‘۔ ایردوآن نے مزید کہا کہ اب وقت آ گیا ہے کہ اقوام متحدہ میں فلسطینی پرچم بھی لہرایا جائے، ’آئیے اقوام متحدہ میں فلسطینی ریاست کا پر چم لہرا دیں اور اس پرچم کو مشرق وسطیٰ میں امن اور آتشی کا نشان بنا دیں‘۔

اپنے مشرق وسطیٰ کے دورے کے آغاز پر قاہرہ میں ایردوآن نے غزہ کی ناکہ بندی پر اسرائیلی پالیسیوں کو بھی کڑی تنقید کا نشانہ بنایا۔ انہوں نے کہا، ’ایک طرف تو ہمارے علاقوں میں اسرائیل اپنے تشخص کا قانونی جواز تلاش کرنے کی کوشش میں ہے اور دوسری طرف وہ غیر ذمہ دارانہ اقدامات سے بھی گریز نہیں کر رہا‘۔

NO FLASH Erdogan

ترک وزیر اعظم ایردوآن عرب لیگ کے وزرائے خارجہ سے خطاب کرتے ہوئے

گزشتہ برس غزہ جانے والے ایک بحری امدادی قافلے پر اسرائیلی کمانڈوز کی ایک متنازعہ لیکن خونریز کارروائی کے نتیجے میں اسرائیل اور ترکی کے سفارتی تعلقات شدید متاثر ہوئے تھے، جو ابھی تک معمول پر نہیں آ سکے۔

ایردوآن کی طرف سے اسرائیل پر ان کی حالیہ تنقید میں عرب ممالک نے بھی ان کا ساتھ دیا ہے۔ عرب لیگ کے سربراہ نبیل العربی نے کہا کہ عرب عوام رجب طیب ایردوآن کی پالیسیوں کی ستائش کرتے ہیں، ’ہم سمجھتے ہیں کہ ہمارا ایک ایسا مضبوط دوست بھی ہے، جو ہمیشہ سچ اور انصاف کے لیے اٹھ کھڑا ہوتا ہے‘۔

ترک وزیر اعظم نے شام کی صورتحال پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ اب شامی عوام کو صدر بشار الاسد پر بھروسہ نہیں رہا۔ قاہرہ کے اوپیرا ہاؤس میں عوام سے خطاب کرتے ہوئے ایردوآن نے کہا، ’شام میں شہری ہلاکتوں سے معلوم ہوتا ہے کہ صدر اسد اصلاحات متعارف کرانے میں ناکام ہو چکے ہیں۔ شامی عوام بشار الاسد پر اپنا یقین کھو چکے ہیں اور میں بھی۔ اب ہم ان پر یقین نہیں کرتے‘۔

NO FLASH Arabische Liga Ägypten Nabil al-Arabi

عرب لیگ کے سربراہ نبیل العربی

قاہرہ میں قیام کے دوران ترک سربراہ حکومت نے مصر کی اعلٰی فوجی اور سیاسی قیادت سے بھی ملاقات کی اور خطے میں قیام امن کے لیے انہیں اپنے بھرپور تعاون کی یقین دہانی بھی کرائی۔ اپنے دورہء مشرق وسطیٰ کے دوران ایردوآن تیونس اور لیبیا بھی جائیں گے۔

رپورٹ: عاطف بلوچ

ادارت: مقبول ملک

DW.COM

ویب لنکس